بابر اعظم اور شاہین آفریدی کے درمیان جھگڑے کی خبروں کی تردید، سینئر کھلاڑی نے حقیقت بتا دی

39
Print Friendly, PDF & Email
فائل فوٹو
فائل فوٹو 

ایشیا کپ میں سری لنکا کی ٹیم سے شکست کے بعد ڈریسنگ روم میں کھلاڑیوں کے درمیان جھگڑے کے بارے میں پھیلی خبروں کی ایک سینئر کھلاڑی نے تردید کردی ہے۔

پاکستان کی سری لنکا سے شکست کے بعد میڈیا پر یہ خبریں گردش کرنے لگی تھیں کہ کپتان بابر اعظم اور فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی کے درمیان میچ کے بعد ڈریسنگ روم میں ہونے والی ٹیم میٹنگ میں زبردست تکرار ہوئی ہے۔

میڈیا رپورٹس میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ ٹیم میٹنگ میں بابر اعظم نے کچھ سینئر کھلاڑیوں کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا تو شاہین شاہ آفریدی نے انہیں کہا کہ آپ کو ایسے کھلاڑیوں کی تعریف بھی کرنی چاہیئے جنہوں  نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

اس گفتگو کے درمیان مبینہ طور پر زبردست تکرار ہوئی جس کے بعد محمد رضوان نے صورت حال کو سنبھالنے کی کوشش کی۔

ویب سائٹ کرکٹ پاکستان کے مطابق، ان خبروں کی تصدیق کے لیے جب پاکستان کرکٹ ٹیم کے ایک سینئر کھلاڑی سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے ایسی تمام خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ’ٹیم کی توجہ صرف کرکٹ پر ہے اور ہمیں ناقدین کی بالکل بھی پروا نہیں ہے‘۔

اُنہوں نے کہا کہ’میچ ہارنے سے ہمارے ناقدین کو اپنی رائے دینے کا موقع ملا ہے لیکن یہ محض منفی قیاس آرائیاں ہیں‘۔

انہوں نے مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ’ٹیم میٹنگ میں سب نے اپنے خیالات کا اظہار کیا لیکن زبانی جھگڑے یا کوچنگ اسٹاف کی مداخلت کی افواہوں میں کوئی سچائی نہیں ہے، سب ایک ساتھ ہی میٹنگ سے اٹھے اور بہت سے  ساتھی تو ایک ہی فلائٹ سے پاکستان واپس آئے‘۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.