پی سی بی کے پاس بھارت کے خلاف نہ کھیلنے کا آپشن نہیں ہے، دانش کنیریا

55
Print Friendly, PDF & Email

پاکستان کے سابق لیگ اسپنر دانش کنیریا نے کہا ہے کہ پی سی بی بھارت کے خلاف نہ کھیلنے کا فیصلہ نہیں کر سکتا۔

تفصیلات کے مطابق بی سی سی آئی کی جانب سے ایشیا کپ 2023 کے لیے پاکستان کا سفر کرنے سے انکار کے بعد دانش کنیریا کو نہیں لگتا کہ پاکستان کے پاس آئی سی سی ایونٹس میں بھارت کے خلاف کھیلنے سے انکار کرنے کا آپشن ہے۔

واضح رہے کہ ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) کے صدر جے شاہ کی جانب سے ایشیا کپ 2022 کے غیر جانبدارانہ وینیو پر انعقاد کے بعد بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے درمیان ایک نئی جنگ چھڑ گئی ہے۔

پی سی بی نے جواب میں ایک سخت بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کا ایسا فیصلہ پاکستان کو 2023 کے ون ڈے ورلڈ کپ سے باہر ہونے پر مجبور کر سکتا ہے۔

جب کہ کرکٹ کے محاذ پر پاکستان اور بھارت کے درمیان ہونے والی اس لڑائی پر کرکٹ کی دنیا سے ردعمل کا سلسلہ جاری ہے اور سابق اسپنر دانش کنیریا نے اس معاملے پر اپنی رائے بتائی ہے۔

Advertisement

لیگ اسپنر دانش کنیریا نے گزشتہ روز اپنے یوٹیوب چینل پر ایک ویڈیو میں مشورہ دیا کہ پاکستان کے پاس بھارت کے فیصلے کو قبول کرنے کے علاوہ کوئی آپشن نہیں ہے کیونکہ آئی سی سی کی 90 فیصد فنڈنگ ​​بی سی سی آئی سے آتی ہے۔

دانش کنیریا نے کہا کہ بی سی سی آئی بہت اچھی طرح سے ایسا کرنے کا فیصلہ کر سکتا ہے اور پی سی بی کوئی اعتراض نہیں کر سکتا کیونکہ بی سی سی آئی دنیا کا سب سے امیر بورڈ ہے اور وہ آئی سی سی کی مجموعی آمدنی میں 90 فیصد حصہ ڈالتا ہے۔

دانش کنیریا کے مطابق اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ پاکستان اس معاملے پر بی سی سی آئی کے موقف سے متفق نہیں کیونکہ انگلینڈ، آسٹریلیا، جنوبی افریقہ اور نیوزی لینڈ، یہ تمام بورڈ بی سی سی آئی کے ساتھ ہیں کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ بی سی سی آئی کے بغیر کچھ نہیں ہے۔

کنیریا نے واشگاف الفاظ میں کہا کہ بھارتی بورڈ بہت، بہت طاقتور ہے، جبکہ موجودہ پاکستان انتظامیہ کافی کمزور ہے، پاکستان بورڈ میں کچھ سخت ایڈمنسٹریٹر تھے جو اب نہیں ہیں۔

دانش نے کہا کہ پی سی بی کی انتظامیہ کو بی سی سی آئی کی باتوں سے اتفاق کرنا پڑے گا۔

دانش کا کہنا تھا کہ میری باتوں پر برا محسوس کرنے کی ضرورت نہیں، کیونکہ یہ دونوں ممالک کے درمیان سیاسی منظر نامے کی وجہ سے ہے کیونکہ ہندوستانی بورڈ کو مطلوبہ کلیئرنس نہیں ملے گی۔

Advertisement

دانش کنیریا نے مزید کہا کہ پاکستان کرکٹ میں بھارت کا کسی بھی سطح پر بائیکاٹ نہیں کر سکتا، لیکن بھارت یہ کر سکتا ہے وہ آئی سی سی ایونٹس میں بھی پاکستان کے خلاف کھیلنے سے انکار کر سکتا ہے۔

کنیریا نے کہا کہ دونوں بورڈز کے اراکین کے ساتھ ساتھ سفارت کاروں کو اس معاملے کو غیر جانبدار مقام پر حل کرنے کے لیے ایک میٹنگ کا اہتمام کرنا چاہیے۔

دانش کنیریا نے ویڈیو میں مزید کہا کہ یہ سب کچھ لیکن یقینی ہے کہ ایشیا کپ اگلے سال پاکستان میں نہیں ہوگا۔ یہ صرف بی سی سی آئی نہیں، کل کو افغانستان بھی پاکستان کا سفر کرنے سے انکار کر سکتا ہے۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.