ابوظہبی ڈائیلاگ نے لیبرمسائل میں کمی اورخواتین کوجابز میںترجیح پر توجہ مرکوز کی(فیصل نیازترمذی)۔

18
Print Friendly, PDF & Email

تارکین وطن کارکنوں کیلئے ابوظہبی ڈائیلاگ شروع۔

اجلاس کی صدرات سفیرپاکستان فیصل نیازترمذی نے کی

ابو ظہبی ڈائیلاگ میں لیبر کے مسائل کو کم کرنے اور

خواتین کی ملازمتوں کو بڑھانے پر توجہ مرکوز کی گئی( سفیر فیصل نیاز ترمذی)۔

ابوظہبی(نیوزڈیسک)::ابوظہبی ڈائیلاگ نے لیبر کے مسائل کو کم کرنے کے ساتھ ساتھ خواتین کی ملازمتوں کو بڑھانے پر توجہ مرکوز کی ابوظہبی ڈائلاگ کی تقریب کی میزبانی پر متحدہ عرب امارات کی حکومت کے مشکورہیں قیادت کوخراج تحسین پیش کرتاہوں ان خیالات کااظہار سفیرپاکستان فیصل نیاز ترمذی نے آج یہاں ابوظہبی میں ابوظہبی ڈائیلاگ کے ساتویں وزارتی مشاورت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔یاد رہے پاکستان ابوظہبی ڈائلاگ کاموجودہ سربراہ ہے۔
سفیرپاکستان فیصل نیازترمذی نے فورم کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ ایک منفرد ڈائیلاگ ہے جو کہ خلیج اور ایشیا کے 17 رکن ممالک کو ایک ساتھ لاتا ہے جس کا بنیادی مقصد مزدوروں کی نقل و حرکت سے متعلق مشترکہ مفادات کے مسائل کو حل کرنا ہے۔ابوظہبی ڈائیلاگ کثیر جہتی تعاون کے لئے ایک پلیٹ فارم کے طور پر کام کرتا ہے، جس میں رہنماوں، پالیسی سازوں، ماہرین اور سٹیک ہولڈرز کو اکٹھا کیا جاتا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ یہ باہمی ربط کو فروغ دینے، تعاون کو بڑھانے اور مزدوروں کی نقل مکانی سے متعلق دیرپا حل کے لئے خیالات کے تبادلے کو فروغ دینے کے لئے ایک طریقہ کار فراہم کرتا ہے ۔
"ٹیکنالوجی مختلف مہارتوں کے تقاضوں کو بدل رہی ہے اور ہمیں بدلتے ہوئے لیبر کے تقاضوں کو پورا کرنے کے لیے اس میں جدت لانے کی ضرورت ہے۔ ہنر مندی کے مجموعوں اور مشغولیت کو متنوع بنانے کی اشد ضرورت ہے جس کا مقصد مہارتوں کی نقل و حرکت کی شراکت داری کو فروغ دینا ہے”،سفیرترمذی نے ابوظہبی ڈائیلاگ کی کوششوں کو سراہا جس میں خواتین کو گرین ملازمتوں میں توجہ دی گئی ہے اور یہ کہ خواتین قابل تجدید توانائی سمیت صنعتوں میں مہارت کے اہم خلا کو پر کر سکتی ہیں۔ "موسمیاتی تبدیلی اور قدرتی آفات بشمول سیلاب سب سے بڑے چیلنجز ہیں جنہوں نے کم سے کم نقصان اور بہتر سے بہتر تعمیر کرنے کے لیے اجتماعی کوششوں کی اہمیت پر زور دیا ہے۔ متحدہ عرب امارات  کی صدارت میں کوپ 28 کے نتائج نے اس چیلنج کا مقابلہ کرنے کی ضرورت کی تصدیق کی ہے”
۔سفیرپاکستان نے مزید کہا کہ "ہجرت اور کام کا مستقبل، ہجرت اور موسمیاتی تبدیلی کے درمیان تعلق، اور تارکین وطن کی صحت – ابوظہبی ڈائیلاگ کی مزید قائم کردہ ترجیحات کی تکمیل کرتے ہیں۔ ان کے لیے بھرتی کے معیار کو بلند کرنے، مہارتوں کی باہمی شناخت اور سرٹیفیکیشن کو حل کرنے، مزدوروں کے تنازعات کے حل کے طریقہ کار کو بڑھانے کے لیے ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانے، اور بین علاقائی اور بین الاقوامی تعاون کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے”،
سفیرپاکستان نے ابوظہبی ڈائلاگ سیکرٹریٹ اور ایڈوائزری کمیٹی کی طرف سے فراہم کردہ تمام تعاون پر حکومت پاکستان کی جانب سے شکریہ ادا کیا۔
کمیونٹی ویلفیئرپاکستان قونصلیٹ جنرل دبئی اتاشی جنید مرتضیٰ نے کہا کہ یہ فورم مزدوروں کی نقل مکانی کی سب سے بڑی عارضی راہداریوں میں سے ایک ہے جومحفوظ، منظم اور باقاعدہ مزدور تحریک کے حوالے سے بامعنی گفتگو اور مکالمے کا اہم موقع فراہم کرتا ہے،پاکستان سمجھتا ہے کہ ابوظہبی ڈائیلاگ میں ہونے والی بات چیت سے چیلنجز سے نمٹنے اور تارکین وطن کارکنوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے مواقع تلاش کرنے میں مدد ملے گی اورمتعلقہ ممالک کو عارضی مزدوروں کی نقل مکانی سے زیادہ سے زیادہ فوائد حاصل کرنے کے قابل بنایا جائے گانیزماہرین کی مدد سے رپورٹوں کا ایک سلسلہ تیار کیا ہے جو ساتویں وزارتی مشاورتی اجلاس میں وزراءکو پیش کی جائیں گی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.