الٰہی اپنی خرابی صحت کے باعث واپس پمز پہنچ گئے۔

13
Print Friendly, PDF & Email

اسلام آباد:

پی ٹی آئی کے صدر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کو طبیعت بگڑنے پر جمعرات کو دوبارہ پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) منتقل کر دیا گیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ (آئی ایچ سی) نے بھی الٰہی کی اہلیہ کی جانب سے اپنے شوہر کی طبی سہولت میں منتقلی کی درخواست کی سماعت کی، تاہم اڈیالہ جیل حکام نے عدالت کو بتایا کہ ان کا تبادلہ کردیا گیا ہے اور بعد میں درخواست واپس لے لی گئی۔

جسٹس طارق محمود جہانگیری نے عدالتی حکم کے باوجود الٰہی کی ہسپتال سے اڈیالہ جیل منتقلی کے خلاف درخواست پر سماعت کی۔ جج کو بتایا گیا کہ پی ٹی آئی رہنما کی طبیعت بگڑنے پر انہیں بدھ کو دوبارہ پمز منتقل کیا گیا۔

اس سے قبل ایلکھی جیل میں گر گیا اور میڈیکل رپورٹ کے مطابق اس کی چار پسلیاں ٹوٹ گئیں۔

پڑھیں خیبرپختونخوا نے الٰہی کے طبی معائنے کرانے کی اجازت مانگی۔

الٰہی کو مبینہ طور پر گرنے کے دوران پیشانی پر چوٹ آئی، اس کے سر کے بائیں جانب نمایاں نشانات تھے۔ اس کی بائیں آنکھ کے قریب اور بائیں بازو پر بھی چوٹیں ہیں اور اس کے سینے کے دائیں جانب سوجن ہے۔ اس کے علاوہ پتہ چلا کہ ایلکھی کے بائیں گھٹنے میں چوٹ آئی ہے۔

پی ٹی آئی رہنما کا پمز اسلام آباد اور بے نظیر بھٹو ہسپتال راولپنڈی کے ڈاکٹروں نے مکمل طبی معائنہ کیا، جن میں جنرل سرجری، کارڈیالوجی اور آرتھوپیڈکس کے ماہرین بھی شامل تھے۔

ڈاکٹروں نے الٰہی کو صحت یاب ہونے کے لیے دو ہفتے آرام کا مشورہ دیا۔

پی ٹی آئی کے سربراہ کو گزشتہ سال دسمبر میں بھی دل کی تکلیف ہوئی تھی۔ جیل ہسپتال میں ابتدائی معائنے کے بعد الٰہی کو راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کر دیا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.