پیرس میں پبلک ٹرانسپورٹ کی ہڑتال سے نظام زندگی درہم برہم

104
Print Friendly, PDF & Email

پیرس میں پبلک ٹرانسپورٹ کی ہڑتال سے نظام زندگی درہم برہم  ہوگئی۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق  پیرس کے بڑے اسٹیشن میں ٹرینوں کی کمی کی وجہ سے لوگوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

خیال رہے کہ پیریس میں ٹرانسپورٹ کا نظام بہت بہترین ہے لیکن حالیہ ہڑتال کی وجہ سے لوگوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

رپورٹس کے مطابق پریس میں پینشن اصلاحات اور مہنگائی کے خلاف زندگی کے تمام شعبے ہڑتال میں اپنا حصہ ڈال چکے ہیں مگر حکومت ٹس سے مس ہونے کیلئے تیار نہیں ہے۔

پبلک ٹرانسپورٹ ہڑتال کی وجہ سے پیرس سے لندن جانے والی ٹرینیں بھی منسوخ کردی گئی اور پیرس ریلوے اسٹیشنز پر پوسٹرز آویزں کیے گئے کہ ٹرانسپورٹ کی یہ ہڑتال کل بھی جاری رہے گئی۔

Advertisement

دوسری جانب فرانسیسی وزیر اعظم الزبتھ بورن نے کہا کہ یہ ہڑتالیں ایک کشیدہ سیاسی تناظر میں ہو رہی ہیں کیونکہ فرانسیسی حکومت خصوصی آئینی اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے 2023 کا بجٹ پاس کرنے والی ہے جو اسے پارلیمنٹ میں ووٹ کو نظرانداز کرنے کی اجازت دے گی۔

Advertisement

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.